محمود خان اچکزئی اور مولانا فضل الرحمان نے بھی فاٹا ریفارمز کی حمایت کردی

عوامی نیشنل پارٹی کی جانب سے بلائے گئی ال پارٹیز کانفرنس کانفرنس میں قومی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ، اسفندیار ولی خان، حاصل بزنجو، فرحت اللہ بابر پروفیسر ابراہم, محمودخان اچکزئی اور فاٹا پارلیمنٹرین کی شرکت, : مولانا فضل الرحمن عوامی نیشنل پارٹی کے زیر اہتمام ال پارٹیز کانفرنس اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ کا خطاب 

فاٹا نے بہت مظالم جھیلے ہیں 


اکثریت یہی چاہتی ہے کہ فاٹا کو کے پی کے میں ضم ہونا چاہئے 

ہم فاٹا اصلاحات کے حق میں عوامی نیشنل پارٹی کے زیر اہتمام ال پارٹیز کانفرنس سے اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کا خطاب خوش آئند بات ہے کہ فاٹا کہ تقدیر بدلنے کے لئے ہم سب اکھٹے ہوئے ہماری پارٹی مطالبہ کرتی ہے فاٹا کو خیبر پختونخواہ میں ضم کیا جائے فاٹا نے دہشت گردی کے ہاتھوں بڑے زخم کھائے ہیں اے این پی کے زیر اہتمام کل جماعتی کانفرنس سے ایم کیو ایم کے رہنما بیرسٹر سیف کا خطاب 

فاٹا میں اصلاحات لانا وقت کی ضرورت ہے


قبائلی عوام کو اپنے تقدیر کا فیصلہ خود کرنے دیا جائے 

اگر قبائلی عوام کے امنگوں کے مطابق فاٹا کے تقدیر کا فیصلہ نہ کیا گیا تو خدشہ ہے آنے والے دنوں کوئی نیا بحران شروع ہوجائے سیاست سے بالاتر ہو کر فاٹا کے تقدیر کا فیصلہ کرنا ملک و قوم کے مفاد ہے

 عوامی نیشنل پارٹی کے زیر اہتمام اے پی سی شاہ جی گل آفریدی کا خطاب 


فاٹا ریفارمز میں رواج ایکٹ کے تحت قبائلی عوام کے اسلام آباد ہائی کورٹ نا منظور ہے،

اسلام آباد ہائیکورٹ کی بجائے پشاور ہائی کورٹ تک رسائی دی جائے ، شاہ جی گل آفریدی 

فاٹا اصلاحات پر عمل در امد کے لیے حکومت کو 9 نومبر تک مہلت دیتے ہیں


9 نومبر کے اسلام اباد میں دما دمست احتجاج کریں گے

شاہ جی گل شاہ جی گل آفریدی 

قبائلی نہیں چاہتے کہ ان کے علاقے کو علاقہ غیر کہا جائے 

کوئی بھی ملک ایسا نہیں جو اپنے علاقے کو علاقہ غیر کہا جاتا ہو یہی وجہ ہے کہ ٹرمپ ہمیں دھمکیا ں دے رہا ہے 

اتنی قربانیوں کے بعد بھی ہمیں دھمکیاں دی جا رہی ہیں 

قبائلی علاقوں کو انضمام نہ کرنا ملک دشمنی ہے فاٹا کے رکن قومی اسمبلی شاہ جی گل آفریدی 

اگر فاٹا کے پی میں ضم نہ کیا گیا تو صوبائی خودمختاری کا مطالبہ کریں گے 

دوسری جنگ عزیم میں بھی کسی قوم پر اتنا ظلم نہیں ہوا جتنا پچھلے ایک دہائی سے قبائلیوں پر ہو رہا ہے 

قبائلی اج بھی پاکستان سے محبت کرنے والے لوگ ہیں 

ہم نے فاٹا کے عوام سے ووٹ لیا ہے, اسی لیے ہمیں علم ہیکہ وہ کیا چاہتا ہیں 

اگر فاٹا رفارمز نہ کی گئی تو ہمارا استقبال اب پتھروں سے کیا جائے گا

 اب تاریخ کا دھارا جس سمت جارہا ہے اس کو نہیں روک سکتے فرحت اللہ بابر 

سلام آباد ہائیکورٹ پر انگلی نہیں اٹھارا فرحت اللہ بابر 

اسلام آباد قبائلی علاقوں سے اپنا تسلط ختم نہیں کرنا چاہتا فرحت اللہ 

فاٹا کا یہی المیہ ہے کہ یہ ایوان صدر سے کنٹرول ہوتا 

جب تک ایف سی آر اورنوابادیاتی نظام کا خاتمہ نہیں ہوگا اس وقت فاٹااصلاحآٹ کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا 

جب تک افغانستان میں امن قائم نہیں ہوتا فاٹامیں امن نہیں آسکتا فرحت اللہ بابر 

کراس بارڈر پر جو الزامات لگ رہیں ان کو دیکھنے کی ضرورت ہے فرحت اللہ بابر کا خطاب 

فاٹا کے انتظام کا چیف اپریٹنگ افیسر کون ہوگا 

مجھے خدشہ ہے چیف اپریٹنگ افیسر ایک حاضر سروس فوجی افیسر ہوگا 

ایوان صدر اور گورنر ہاؤس عملا غیر موثر ہوجائیں گے

 مولانا فضل الرحمٰن کا ال پارٹیز کانفرنس سے خطاب

قبائل اس وقت مصیبت میں ہیں,

 مولانا فضل الرحمان کا اے این پی کی اے پی سی سے خطاب

 طویل عرصے کے بعد مشکل ماحول کا سامنا کررہا ہوں فضل الرحمان 

قوموں کی زندگی میں بعض دفعہ اہم موڑ آیا کرتے ہیں 

اس طرح کے حساس موضوعات پر مباحثے ہونے چاہیں 

جب مباحثے ہوں گے تو اپنا کردار بھی بہتر ادا کرسکیں گے 

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی میں ایک بل زیر بحث دوسرے بل کی منظوری خلاف قواعد ہے فضل الرحمٰن 

فاٹا میں چیف اپریٹنگ افیسر کی تعیناتی برائی کی بنیاد تو بن سکتا مسائل نہیں ہوسکیں گے 

فاٹا پسماندہ نہیں ہے بلکہ اس کو پسماندہ رکھا گیا 

یہی بات سامنے رکھ کر انضمام کی باتیں ہورہی ہیں فضل الرحمان 

آج قبائل پر برا وقت ہے ہم گھر سے بے گھر ہیں 

ہماری مائیں بہنیں بچے دربدر پھر رہے ہیں فضل الرحمٰن 

میرا موقف وہی ہے جو قبائل کے جرگے نے پشاور اور اسلام آباد میں اپنایا تھا فضل الرحمان 

جب تک فاٹا کے عوام کی رائے نہ ہو کوئی دوسری رائے مکمل نہیں ہے 

قبائل کو عزت کیوں نہیں دی جارہی

: مولانا فضل الرحمٰن 

رواج ایکٹ کے تحت کوئی قانون یے فضل الرحمان 

فاٹا میں لینڈ کا کوئی ریکارڈ نہیں ہے ان سب معاملات دیکھنا اتنا آسان نہیں ہے فضل الحق 

رواج ایکٹ کی کوئی تعریف نہیں 

جہالت اور سورا کی رسم کوختم کرنا ہو گا

 فضل الرحمان 

فاٹا کو خیبرپختونخوا میں ضم کرنے فیصلہ کیا تو یہ مشکلات اور پیچیدگیاں پیدا کرے گا فضل الرحمان

اسفندیار ولی نے فاٹا کو پہلے میڈیا میں متنازعہ بنیایا , اور اب اے پی سی کے ذریعے متنازعہ بنا رہے ہیں, مولانا فضل الرحمن

 فاٹا کے مسلے کو روز روز متنازعہ نہ بنائیں فضل الرحمٰن 

ہمیں اتفاق رائے کی طرف جانا ہوگا فضل الرحمان 

اسفندر یار سے شکوہ ہے اس مسئلے متنازعہ بنارہے ہیں فضل الرحمٰن 

مہمان ہوں اس لیے جرات سے بات کررہا ہوں فضل الرحمان 

سٹیٹس کو تبدیل کرنے کیلئے فاٹا کے عوام سے پوچھنا ہوگا فضل الرحمان 

اسفندیار ولی کو واضح کرنا ہوگا انضمام کی صورت میں ڈیورنڈلائن کا کیا پوزیشن ہوگی فضل الرحمان 

اگر ایک کمیٹی بنالی جائے تو اس معاملے کو افہام وتفہیم سے حل کیا جائے فضل الرحمان

[ پروفیسر ابراہیم کا اے پی سی خطاب 

فاٹا کا موجودہ نظام ظالمانہ ہے, پروفیسر ابراہیم

اج کے اے پی سی اعلامیے کی مکمل حمایت کرتے ہیں, پروفیسر ابراہیم جماعت اسلامی

سیاسی اختلافات کے باوجود انگریزوں کے تابع ازماووں کے خلاف یکجا ہیں , پروفیسر ابراہیم

مولانا اور اچکزئی کے اختلافات ختم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے, پروفیسر ابراہیم

فاٹا کو جلد کے پی میں ضم کیا جائے, جماعت اسلامی

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s